سیرت وسوانح شعر وشاعری صفحہ اول

منقبت درشان امام حسین رضي الله عنه

نتیجۂ فکر: محمد جیش خان امجدی، مہراج گنج

 

فضلِ خدا سے دیکھئے شہرت حسین کی
ہے سب کے دل میں آج بھی الفت حسین کی

گر چاہتے ہو سر خرو ہونا جہان میں
دل میں ہمیشہ رکھو محبت حسین کی

دینِ محمدی کو بچانے کے واسطے
دینی پڑی علی کو شہادت حسین کی

قربان ہوگیاہے جو آقا کے نام پر
اس کو ملے گی حشر میں جنت حسین کی

ظلم وجبر کا خاتمہ کرنے کے واسطے
محسوس ہورہی ہے ضرورت حسین کی

سرکارِ دوجہاں کے توسل سے اےخدا
مل جاۓ اب مجھے بھی رفاقت حسین کی

مٹی بھی سرخ ہوگئی سلمہ کے ہاتھ میں
کربل میں جب ہوئی تھی شہادت حسین کی

نوری ملے گی تجھکو بھی جنت کی چابیاں
گر تیرے دل میں پنہاں ہے چاہت حسین کی

Related posts

رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے اعزا واقارب۔

Hamari Aawaz Urdu

نظم: توہین برادشت نہیں

Hamari Aawaz Urdu

فلسطین واقصٰی کا آخر حل کیا ہے؟

Hamari Aawaz Urdu

ایک تبصرہ چھوڑیں