ادبی تازہ ترین خبر ملی

سہ ماہی پیام برکات علی گڑھ کے مسابقہ مقالہ نویسی 2020ء کے نتائج کا اعلان

علی گڑھ 03/نومبر,ضیاءالرحمن امجدی

ادارہ سہ ماہی پیام برکات علی گڑھ کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے مسابقہ مقالہ نویسی کے نتیجے کا اعلان نومبر 2020ء کو کیا گیا، اس مقابلے میں ملک کے مختلف علاقوں، صوبوں سے نوجوان قلم کاروں نے حصہ لیا اور اپنی دلچسپی دکھاتے ہوئے 300 سے زیادہ مرد و خواتین قلم کاروں نے رجسٹریشن کرایا اور ان میں سے ایک اچھی تعداد میں مضامین شامل ِمسابقہ ہوئے، جس میں اول دوم سوم پوزیشن سمیت 8 تشجیعی  اور 5 خصوصی انعامات کے ساتھ کل 16 قلم کاروں کے لیے گراں قدر انعامات کا اعلان کیا گیا۔دس ہزار کا پہلا انعام محمد فاروق خاں مصباحی ممبئی مہاراسٹر، سات ہزار کا دوسرا انعام ابو دجانہ آفاقی مجددی قنوج یوپی اور پانچ ہزار کا تیسرا انعام حیدر رضا پورنیہ بہار نے حاصل کیا۔

تشجیعی اور خصوصی انعام یافتگان کے نام یہ ہیں : محمد حسان نظامی سنت کبیر نگر، محمد عرفان برکاتی کان پور ، محمد شمیم اختر مصباحی اڈیسہ، عطاء الرحمٰن نوری مالیگاؤں مہاراسٹر، عبدالکریم خاں مصباحی شراوستی یوپی، عفت جہاں ہاشمی امروہہ، احمد صفی فتح پور، کنیز حسین مالکی جمشید پور جھارکھنڈ ، محمد مفیض الدین مصباحی بہار، محمد عبداللہ رضوانی سیتامڑھی بہار، صدام حسین اشرفی راجستھان، عاشق القادری یوپی، احسان الحق جامعی کشن گنج بہار۔

مقابلے کے لیے رجسٹریشن کی آخری تاریخ 31 اگست 2020ء تھی جبکہ مقالہ جمع کرنے کی آخری تاریخ 30 ستمبر تھی اور یکم نومبر کو نتیجے کا اعلان کیا گیا۔

واضح ہو کہ اس مسابقے میں ملک کے تقریباً 12 بڑے صوبوں” مہاراشٹر ، گجرات، حیدرآباد، کشمیر، کیرلا، کرناٹک، راجستھان، مدھیہ پردیش، اڈیسہ، یوپی، بہار،جھارکھنڈ،بنگال وغیرہ” سے قلم کاروں نے حصہ لیا۔

اس مقابلے کے بحسن و خوبی اختتام پذیر ہونے پر علماے کرام اور دانشوران ملت نے اپنے اپنے گراں قدر تاثرات دے کر ادارے کی حوصلہ افزائی فرمائی اور قلم کاروں کو مبارک باد پیش کی۔

المجمع الاسلامی مبارک پور ضلع اعظم گڑھ کے بانی رکن مولانا محمد عبدالمبین نعمانی قادری نے مسابقے کے انعقاد پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ”جماعت کے قلم کاروں میں بڑے اچھے اچھے مقالہ نگار کامیابی کی منزل سے ہمکنار ہوئے اور طے کیا کہ ہمیں اس عالم رستاخیز میں کیا کرنا چاہیے جس سے ہم نکبت و ناکامی کے دلدل سے نکل کر ہم ذروہ فوز و فلاح پر اپنی کامیابی کا علم گاڑ سکیں گے”،مزید کہا کہ “ہمیں ان نوجوان قلم کاروں سے بڑی امیدیں وابستہ ہیں “

ادارے کےڈائریکٹر مولانا سید محمد امان قادری نے مسابقے کے انعقاد کا مقصد بتاتے ہوئے کہا کہ نوجوان قلم کاروں میں لکھنے کا مزید شوق اور جذبہ پیدا ہو، اس لیے ہمارے ادارے نے اس طرح کے مقابلہ جاتی مسابقے کا انعقاد کیا، مزید بتایا کہ آئندہ بھی اس طرح کے مقابلہ جاتی پروگرام کا انعقاد کیا جائے گا۔

بی ایچ یو، بنارس میں شعبہ اردو کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد افضل مصباحی نے مسابقے کے اختتام پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے تمام شرکاء کو مبارک باد پیش کی اور کہا کہ “اس طرح کے مقابلوں سے لکھنے والوں کو حوصلہ ملتا ہے وہ مطالعہ کرتے ہیں پھر لکھتے ہیں۔سچائی یہ ہے کہ اس طرح کے مقابلوں سے زبان کوبھی فروغ ملتاہے۔ اردو زبان وادب کی ترقی میں اس طرح کے تحریری مقابلے کلیدی کردار ادا کرتے ہیں۔”

ڈاکٹر عبدالسلام جیلانی، شعبہ تاریخ، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی نے بھی تحریری مسابقے کے انعقاد پر مسرت کا اظہار کیا اور کہا کہ ایسے مسابقے میں شرکت کرنے سے نوجوان قلم کاروں کو اپنی تحریری صلاحیت بیدار کرنے کے مواقع ملیں گے،جو کہ خوش آئند ہیں۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ شعبہ اردو کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عمران احمد عندلیب نے حوصلہ افزا کلمات کچھ اس طرح بیان فرمائے کہ “کسی بھی ادارے سے رسالہ نکالنا بذات خود ایک بڑا اور اہم کام ہے ساتھ ہی ساتھ مضمون نگاری کے ایسے پروگرامس جن سے نئے لکھنے والوں میں تحریری صلاحیت پیدا ہو یقینا قابل داد ہے، ایسے مقابلوں کا انعقاد اردو زبان و ادب کی ترقی میں بہترین معاون ہو سکتے ہیں،اس لیے وقتاً فوقتاً ایسے مسابقے منعقد کرتے رہنا چاہیے۔

“سہ ماہی پیام برکات” کے ذمہ داران مبارکباد کے مستحق ہیں جنہوں نے اتنے اچھے پروگرام کا انعقاد کیا ۔اس طرح کے پروگرام سے نئے لکھنے والوں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے ۔مضمون نگاری ایک اہم فن ہے جس کے لیے وسیع مطالعے کے ساتھ ساتھ خیالات و الفاظ کی وادیوں میں بھٹکنا پڑتا ہے۔میں ایک بار پھر  “سہ ماہی پیام برکات “کے اراکین کو مبارکباد پیش کرتا ہوں اور امید کرتا ہوں کہ مستقبل میں بھی ایسے پروگرامس کے ذریعہ طلبہ وطالبات کی حوصلہ افزائی کرتے رہیں گے۔ “

مولانا آزاد نیشنل یونیورسٹی حیدرآباد میں شعبہ عربی کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد شاکر رضا مصباحی نے بھی قیمتی تاثر پیش کرتے ہوئے کہا کہ “نوجوان اہل قلم کے لیے مقالہ نویسی کے اس مقابلے کا انعقاد ایک خوشگوار کوشش اور بڑا مبارک قدم ہے جس کے لیے امیر کارواں مولانا سید محمد امان قادری اور  سہ ماہی پیام برکات کے سارے ارکان ومعاونین لائق مبارکباد ہیں ۔”

مسابقے کے نتیجے کا اعلان ادارے کے ڈائریکٹر سید محمد امان قادری اور دیگر اہم شخصیات کے ذریعے عمل میں آیا۔ادارہ سہ ماہی پیام برکات شرکت کرنے والے سبھی قلم کاروں کو مبارک باد پیش کرتا ہے اور اس کار خیر میں عملی تعاون پیش کرنے والوں کابےحد مشکور ہے۔

رپورٹ: محمد عارف رضا نعمانی

کنوینرمسابقہ

Related posts

علم ہی سے قدر ہے انسان کی

Hamari Aawaz Urdu

علم حاصل کرو، کرلو دنیا مٹھی میں

Hamari Aawaz Urdu

مسلمانوں کا زوال  اوراس کے اسباب

Hamari Aawaz Urdu

ایک تبصرہ چھوڑیں