شخصیات صفحہ اول

پیر سید کمیل اشرف رحمہ اللہ کی رحلت اہل سنت والجماعت کے لیے عظیم خسارہ

از قلم: محمد قیصر رضا امجدی، گورکھ پور

شہزادۂ غوث الثقلین مناظر عالم اسلام احسن المشائخ حضور سیدی و سندی پیر طریقت رہبر راہ شریعت گل گلزار اشرفیت سید کمیل اشرف اشرفی الجیلانی علیہ الرحمۃ و الرضوان جنکے رحلت فرمانے سے اہلسنت وجماعت کے درمیان ایک عظیم خسارہ ہوا ۔جیسے ہی یہ خبر موصول ہوئ کہ اب خانوادۂ اشرفیہ کا وہ چمکتا اور دمکتا آفتاب ہمیشہ کے غروب ہو گیا تو اس وقت عشاق و محبین آب دیدہ ہو گےء ایوان حکمت و تدبر میں سناٹا سا چھا گیا ۔ فلک تصوف کا وہ نیر تاباں ہمیشہ کے لےء رو پوش ہو گیا گلستان علم و ادب کا وہ خوبصورت پھول ایثار و قربانی تقوی’ و طہارت کی خوشبو ؤں کو بکھیر کے ہم تمام معتقدین و متوسلین کو داغ مفارقت دیکے دارالفناء سے دارالبقاء کی طرف روانہ ہو گیا ۔ حضور سید کمیل اشرف اشرفی الجیلانی علیہ الرحمہ آپ تا دم حیات اسلام و سنیت کی ترویج و اشاعت میں منہمک رہے اپنے اسلاف کبار کے مقاصد حسنہ و عزائم جمیلہ کو عام سے عام تر کرنے میں لیل و نہار سعئ بے کراں کرتے رہے ۔ حضور سرکار کمیل اشرف علیہ الرحمہ بزرگان دین کی علمی و ادبی یاد گار تھے آپ کے جزبۂ ایثار و قربانی کو بالائے طاق نہیں رکھا جا سکتا ہے ۔ آپ کے ایسے ایسے کارہائے نمایا ہیں کہ ارباب فکر و نظر انہی کارہائے نمایا کو یاد کرکے آہ و بکاء کے عالم میں ہیں ۔ آپ حلقۂ علمائے کبار میں محبوب و عزیز اور معتمد علیہ شخصیات میں سے تھے حضور سید کمیل اشرف علیہ الرحمہ کی ذات با برکات اہل سنن کے لےء لائق صد افتخار تھی ۔ یو ں محسوس ہوتا ہے کہ ان کے وصال پر ملال سے مدارس و خانقاہ کے اندر ایک خلاء سا پیدا ہو گیا ۔
اللہ رب العزت کی بارگاہ صمدیت میں دعاء کہ مولی’ عز وجل ان کا کوئ بہترین نعم البدل پیدا فرمائے علوم و فنون کا وہ جبل ہمالہ کہ جس نے اپنی خدا داد صلاحیت و لیاقت کے ذریعے بڑے بڑے مناظرے کر کے اہل دیا بنہ اور فرقہاےء باطلہ کو ایسا دنداں شکن جواب دیتے رہے کہ غیر مقلدین کے تمام تر منصوبات رذیلہ کو خاک پلید کر کے رکھ دیا ۔ تصوف و طریقت کا وہ بلند مینارہ کہ نا جانے کتنے گم گشتگان راہ کو رشد و ہدایت ، تو حید و رسالت سے شناسا کرایا اور اپنا علمی فیضان تقسیم کرکے ہم تمام لو گوں کو روتا بلکتا چھوڑ کے چلا گیا ۔
مقام تغابن ہے اس دور قحط الرجال میں علماء ، فضلاء ، صوفیاء کا اتنی سرعت کے ساتھ اس دار فانی سے چلے جانا مدارس و مکاتب و خانقاہ کو الوداعی سلام کہ کے داعئ اجل کو لبیک کہ دینا کسی المناک و اندوہ خبر سے کم نہیں ہے مزید بر آں سال 2020 کو اگر عام الحزن کہا جائے تو نزد اہل فکر و تدبر بے جا نہ ہوگا ۔ اس لےء کہ امسال ( یعنی سال 2020 ) میں جتنی تیزی کے ساتھ فلک علم و فضل کے درخشندہ ماہ نجوم غروب ہوئے ہیں ایسا کبھی سننے کو نہیں ملا ۔
اللہ تبارک و تعالی کی باگاہ مقدس میں دعاء کہ رب تبارک و تعالی حضور سید کمیل اشرف اشرفی الجیلانی علیہ الرحمہ کے مرقد انور پہ انوار و تجلیات کی بارش عطاء فرمائے ان کے مراتب و درجات کو بلند سے بلند تر فرمائے ان کو غریق رحمت فرمائے حضور سیدی و سندی سید کمیل اشرف اشرفی الجیلانی علیہ الرحمہ کے تمام پسماندگان و لواحقین ، معتقدین ، محبین ، مخلصین کو صبر جمیل اور اجر جزیل عطاء فرمائے ۔
آمین یا رب العلمین بجاہ سید المرسلین صلی اللہ تعالی علیہ وسلم
۔( شریک غم ) مفتی محمد اظہر شمسی نائب قاضی و مفتی شہر گو رکھپور

Related posts

بُنکروں کی گھریلو صنعت خطرے میں

Hamari Aawaz Urdu

“یہ ‘مولانا’ ہی کا حصہ تھا”

Hamari Aawaz Urdu

عظمت نبی پر ہماری ہزاروں جانیں قربان

Hamari Aawaz Urdu

ایک تبصرہ چھوڑیں